Wednesday, November 09, 2022

میرے محبوب

بزرگروں سے سناہے کہ شاعروں کی بخشش نہیں ہوتی وجہ، وہ اپنے محبوب کو
خدا بنا دیتے ہیں اور اسلام میں اللہ کے برابر کسی کو رکھنا شِرک یعنی ایسا گناہ مانا جاتاہے، جس کی معافی تک نہیں ہے کہنے کا مطلب یہ ہے کہ شاعر جنت کے حق دار نہیں ہوتے اُنہیں دوزخ(جہنم) میں پھینکا جائے گا اگر واقعی ایسا ہے تو مجھے دوزخ بھی قبول ہے آخر وہ بھی تو اُسی اللہ کی تعمیر کی ہوئی ہے جب ہم اپنے محبوب (چاہے وہ خیالی ہی کیوں نہ ہو)سے اتنی محبت کرتے ہیں کہ اُس کے سوا کسی اور کا خیال کرنا بھی کفر محسوس ہوتاہے اُس کے ہر ستم کو اُس کی ادا مان کر دل سے لگاتے ہیں پھر جس خدا کی ہم عمر بھر عبادت کرتے ہیں تو اُس کی دوزخ کو خوشی سے قبول کیوں نہیں کرسکتے ؟
میری ایک نظم میں ’پرستش‘ لفظ ہٹا دو، ورنہ تمہیں بھاری گناہ ہوگا
آج اپنی پسند کی وہ نظم پوسٹ کر رہی ہوں:

نظم
میرے محبوب
عمر کی
تپتی دوپہری میں
گھنے درخت کی
چھاؤں ہو تم
سلگتی ہوئی
شب کی تنہائی میں
دودھیا چاندنی کی
ٹھنڈک ہو تم
زندگی کے
بنجر سحرا میں
آبِ زم زم کا
بہتا دریا ہو تم
میں صدیوں کی
پیاسی دھرتی ہوں
برستا ،بھیگتا
ساون ہو تم
مجھے جوگن کے
من مندر میں بسی
مورت ہو تم
میرے محبوب
میرے تابندہ خیالوں میں
کبھی دیکھو
سراپا اپنا
میں نے
دنیا سے چھپا کر
برسوں
...تمہاری پرستش کی ہے
فردوس خان-

Friday, September 11, 2020

رحمتوں کی بارش

 


 اپنے پیارے آقا حضرت محممد صللاہ علیہ وسلم کی شان میں کلام
...رحمتوں کی بارش 
میرے مولا
رحمتوں کی بارش کر ہمارے آقا
حضرت محممد صلللاہ علیہ وسلم پر
جب تک
کائنات روشن
رہے
آفتاب نکلتا رہے
شام ڈھلتی رہے
اور رات آتی جاتی رہے
میرے مولا
سلام نازل فرما
ہمارے نبی صلللاہ علیہ وسلم
اور آل نبی کی روحوں پر
ازل سے ابد تک
فردوس خان-

عقیدت کے پھول



 اپنے پیارے آقا حضرت محمًد
صلً اللہ علیہ وسلم کی شان میں 

... عقیدت کے پھول
میرے پیارے آقا
میرے خدا کے محبوب 
صلً اللہ علیہ وسلم
آپ کو لا کھوں سلام 
پیارے آقا 
ہر صبح 
چمبیل کے 
مہکتے سفید پھول 
چنتی ہوں 
اور سوچتی ہوں 
یہ پھول کس طرح آپ کی خدمت میں پیش کروں 
میرے آقا 
چاہتی ہوں 
آپ ان پھولوں کو قبول کریں 
کیونکہ 
یہ صرف چمبیل کے 
پھول نہیں ہیں 
یہ میری عقیدت کے پھول ہیں 
جو آپ کے لئے ہی کھلے ہیں 
فردوس خان-

Wednesday, December 28, 2016

اللہ تو ہی تو

میرے مولا
مجھے تیری دوزخ کا خوف نہیں
اور نہ ہی
تیری جنت کی کوئی خواہش ہے
میں صرف تیری عبادت ہی نہیں کرتی
تجھ سے محبت بھی کرتی ہوں
مجھے فردوس نہیں، مالک-فردوس چاہئے
چونکہ
میرے لئے تو ہی کافی ہے
...اللہ تو ہی تو
فردوس خان-



کلمہ ...

! میرے مولا
پہلے زباں پر
کلمے ​​کی طرح
...اس کا نام رہتا تھا
لیکن
اب شامو-سحر زباں پر
صرف اور صرف
 ...کلمہ ہی رہتا ہے.
وہ اشقے-مجازی تھا
اور
...یہ اشقے-حقیقی ہے 
فردوس خان-